لال بتی اور پولیس

شام کے اندھیرے میں انسپکٹر نے کانسٹیبل کو ایک سڑک پر موبائل سے اتارا اور اشارے سے بتایا ” تمہاری ڈیوٹی اس بلڈنگ سے لے کر اس سگنل تک ہے ” اس نے کافی دور دھندھ لاہٹ میں جھلملاتی ہوئی ایک لال بتی کی طرف اشارہ کیا ” صبح تھانے میں آ کر رپورٹ کرنا ”
لیکن کانسٹیبل صبح تو کیا پورا ایک ہفتہ تک تھانے نہیں پہونچا . دسویں دن عین اس وقت جب اسے گمشدہ قرار دینے کے بارے میں غور ہو رہا تھا تو وہ آن پوھنچا . اس کی وردی پھٹی ہوئی تھی . جوتے ٹوٹ چکے تھے . سر سے پاؤں تک وہ خاک میں اٹا ہوا تھا ، شیو بڑھی ہوئی تھی اور شکل پر وحشت طاری تھی . انسپکٹر کو سلیوٹ مار کر اس نے رپورٹ دیتے ہوے کہا ” سر جو لال بتی آپ نے مجھے دکھائی تھی ، وہ تو ٹرک کی بتی تھی اور وہ ٹرک پشاور جا رہا تھا.

 

Leave a Reply